بنیادی صفحہ » آج کی دعا » منزل فکر و نجات

منزل فکر و نجات

منزل فکر و نجات

سلام صبح زنجیرء وقت کو قطع کرتا زندگی کی کہانی میں رکھی گئی انتہا پسند مخلوق کے ہاتھوں معصوموں کے قتل عام کی ازیت کو اپنی وجودی ترتیب سے کم کرنے کی سعی کرتے ہوئے حاضر ہے قبول فرمائیں۔ ۔۔
خطہءزمین پہ معاصیت کی لا محدود اور ماورائے عقل عملیات نے نظام یونیورس کو تاراج کر کے حضرت انسان کوانسانیت کی سطح سے گرتے دیکھا ہے۔ اور اس سے بآسانی ثابت ہو گیا کہ اس تصورجہنم کا ایندھن یقینا” یہی انسان ہے، جو خود اپنی۔ہی صنف کو اس بے دردی سے مٹا ڈالتا ہے اور اسکے دل میں احساس و ملال۔کا شائبہ تک نہیں ملتا۔
یہ دلوں میں احساس کا مادہ، دوسرئے انسانوں کی دل میں محبت اور حدت الہی کا قرب محض خاصان الہی کا شیوہ ہوا کرتا ہے وہ کبھی کسی دوسرئے انسان پر نہ انگلی اٹھا سکتے ہیں اور نہ ہتھیار۔
وقت کی گرداب میں پھنسے یہ وجود نہ جانے گزرئے کل کے کس روپ سے نکل کر آج کے اس روپ میں اور اس وقت میں دنیا کے سامنے اپنے انجام کو پہنچ کر سزائے ابدی کا شکار ہونے کے سزاوار قرار پائے ہیں ۔
اپنی زندگی کو فکر و عمل سے مزین کر کے مکمل تعلیمات الہی سے مستفید ہوں ۔ وقت بہت کم باقی ہے اور مثبت کا پیدا کرنا بہت اہم ہو چکا ہے اور حضرت انسان ہر بات کو بے وقعت سمجھ کر ہر عمل شرانگیز کو اپنانے میں پیش پیش ہے۔
اسلام اسی انے والے وقت کی اذیت سے تحفظ کے لیئے متنبہ کرتا رہا اور ہم مسلک و مفاد پرستئ وقتئ و شخصی میں الجھے اپنی تعمیر ذات و اعمال جو وجہء استحکام عالم تھے انہی کو پس پشت ڈالے آج اذیت و کرب میں مبتلا ہیں اور نجات کی کوئی صورت دور دور تک دیکھ نہیں پا رہے۔
اسلام نے کتنی صدیوں قبل ہی بیان فرما دیا تھا کہ ” اور جب دنیا ظلم و جور سے بھر جائے گی تب نائب رسالت ص، امام مہدی ع کا ظہور ہو گا۔
آج ان تمام تنبیہات کے باوجود یہ معاشرہ ذاتی ہوس نفس کے لبادہ میں مقید ہو چکا ہے اور نجات کی ہرتدبیر و ترتیب سے محروم ہے۔
اب اسی ایک نئے ہادی و راہبر کی اشد ضرورت ہے جو آخری پیغام رسالت کو آج کے دور میں منوا کر عمل پیرا کروا سکے اور انسانیت کا نجات دہندہ ثابت ہو۔
آئے خدا اب اپنی مخلوق کے گناہوں کو معاف فرما کر زمین کو خون ریزی اور قتل و غارت سے اپنی پناہوں میں لے لے اور نجات دھندہء کل انسانیت، اپنی حجت تمام کو ازن ظہور عطا فرما اور ہر نفسء وجودی کو راحت و معرفت کی لذات سے بہرہ ور فرما۔
اناللہ کو کمال و یقین ء الیہ راجعون عطا فرما۔
دعائے رب کو قوت پرواز عطا فرما کہ بلندیوں سے قبولیت کے رضائی خزانے نچھاور کروا نے کا سبب بن سکے۔
الہی آمین
روحانی سکالر عارفہ شاعرہ مصنفہ و کالم نگار
طاہرہ رباب الیاس
ہیمبرگ جرمنی

تعارف: Admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

x

Check Also

عالم استعجاب

عالم استعجاب سلام صبح سورج کی کرنوں سے نور سحر کی جلاء باری چراتے آج ...