بنیادی صفحہ » اوورسیز کمیونٹی » قونصلیٹ کے اندربغیر سفارش کام کرنے کے کلچر کو پروان چڑہانے کی کوشش کی، ندیم احمد

قونصلیٹ کے اندربغیر سفارش کام کرنے کے کلچر کو پروان چڑہانے کی کوشش کی، ندیم احمد

قونصلیٹ کے اندربغیر سفارش کام کرنے کے کلچر کو پروان چڑہانے کی کوشش کی، ندیم احمد

(رپورٹ منور علی شاہد فرینکفرٹ )اپنے تین سالہ دور میں ایمانداری سے کوشش کی کہ قونصلیٹ میں آنے والوں کو کسی بھی قسم کی سفارش کی ضرورت نہ پڑے اور ہر پاکستانی کے کام عزت و احترام کے ساتھ ہوں اور بلا تاخیر بروقت ہوں۔ یہ بات ندیم احمد قونصل جنرل فرینکفرٹ نے اپنے اعزاز میں منعقدہ الوداعی تقریب میں خطاب کے دوران کہی، تلاوت قرآن پاک اور نعت کے ساتھ شروع ہونے والی تقریب میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ میں نے چارج سنبھالنے کے بعد سے اختتام تک یہی کوشش کی تھی کہ دفتر میں وقت سے پندرہ منٹ پہلے پہنچوں تاکہ سائلین کو غیر ضروری انتظار نہ کرنا پڑے،انہوں نے اپنے سٹاف کا بھی شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے بھی اس عرصہ کے دوران وقت کی پابندی پر عمل کرنے کی بھرپور کوشش کی۔ ندیم احمد نے کہا کہ ان کی بھرپور کوشش رہی تھی کہ وہ قونصلیٹ میں آنے والوں کو فوقیت دیں اور میٹنگز وغیرہ چھوڑ کر بھی ان کے مسائل سننے کو ترجیح دینے کی کوشش کی ،انہوں نے ہیڈ آف چانسلری شعیب منصور کی صلاحیتوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ شعیب منصور کی انتظامی اور سفارتی صلاحتیں کھل کے سامنے آئی ہیں ، انہوں نے اس موقع پر پاکستانی اسائلم سیکرز اور بزنس کمیونٹی کے مسائل، اور کشمیر ڈے پر منعقدہ پروگراموں بارے بھی شرکا ء کو اپنی کوششوں سے آگاہ کیا، پاکستان پریس کلب،اس کے عہدیداروں اور پاکستانی کمیونٹی کا خاص طور پر شکریہ ادا کیا جس نے ان کا تین سالوں میں ان کا بھرپور ساتھ دیا اور بے پناہ محبت اور خلوص کے ساتھ اپنی تقریبات میں بلاتے رہے اور مجھے آج یون لگ رہا ہے کہ گویا فیملی سے الگ ہو رہا ہوں
سلیم پرویز بٹ صدر پریس کلب کی نمائندگی میں سید رضوان حسین جنرل سیکرٹری پریس کلب نے اپنے کلمات میں ندیم احمد کی سفارتی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور پاکستانیوں کے لئے ان کی خدمات کو ہم خراج تحسین پیش کرتے ہیں، ان کی کاوشیں قابل ستائش ہیں،چھٹیوں کے دوران بھی کام کرتے تھے اور تین سالہ سروس کے دوران کچھ غیر منافی رویوں کو خندہ پیشانی سے قبول کرتے رہے تھے۔تقریب کے میزبان اور پریس کلب کے نائب صدر اقبال حیدر نے ندیم احمد کی خدمات اور کاوشوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اکتیس سال کی فارن افیئر کی ملازمت کے بعد اب ریٹائرمنٹ کی زندگی سے لظف اندوز ہونگے،آپ نے اپنے دور میں یہاں مقیم پاکستانیوں کے مسائل سیاسی و مذہبی بالا ہوکر حل کئے اور خاص طور پر وی آئی پی کلچر کو ختم کرنے کی بنیاد رکھی جو وقت کی اولین ضرورت تھی۔یادگار الوداعی تقریب میں عرفان احمد خان نے بھی اظہار خیال کیا۔تقریب میں ہیڈ آف چانسلری شعیب منصور ، فواد بھٹی ڈائریکٹر پاسپورٹ کے علاوہ پاکستان جرمن پریس کلب کے سبھی ممبران، بز نس کمیونٹی کے علاوہ بڑی تعداد میں پاکستانیوں نے بھی شرکت کی۔تقریب کے اختتام پر ریفریشمنٹ کے علاوہ ندیم احمد کے ساتھ گروپ فوٹو سیشن بھی ہوئے

تعارف: Admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

x

Check Also

“ پاکستانی کميونٹی ٹوسٹماسٹرز کلب کی بنیاد

سعودی عرب کے منطقہ شرقیہ کے شہر الخُبر ميں پاکستانی کمیونٹی کے لیے سب سے ...