بنیادی صفحہ » اوورسیز کمیونٹی » پاکستان اسٹوڈنٹ ایسوسی ایشن بریمن کے زیر اہتمام پاکستان کلچرل نائٹ کا اہتمام

پاکستان اسٹوڈنٹ ایسوسی ایشن بریمن کے زیر اہتمام پاکستان کلچرل نائٹ کا اہتمام

 

پاکستان اسٹوڈنٹ ایسوسی ایشن بریمن کے زیر اہتمام پاکستان کلچرل نائٹ کا اہتمام

بریمن : رپورٹ فاروق بیگ بریمن ۔۔ جرمنی
پاکستان اسٹوڈنٹ ایسوسی ایشن بریمن کے زیر اہتمام پاکستان کلچرل نائٹ کا اہتمام کیا گیاکلچرل نائٹ پروگرام کا باقاعدہ اغاز پاکستان کے قومی ترانے تلاوت قرآن مجید سے کیا گیا جو کہ ننھے ھارون رشید بیگ نے تلاوت کے بعد جرمن ترجمے کے ساتھ پیش کی ۔ اور اس پروگرام میں اسٹیج سیکٹری کے فرائض شہروز اسلم اور سدرہ مریم نے سر انجام دئے ۔پی ایس اے بریمن کے صدر خرم شہزاد نے شرکاء سے خطاب کرتے ھوئے پی ایس اے کے قیام کے اغراض ومقاصد بیان کئے انہوں کہاکہ اج ہم پاکستان کلچرل نائٹ اور پاکستانی ثقافت کو اپنے ہم کلاس یونیورسٹی کے اساتذہ و طلبہ سمیت دیگر اسٹاپ کو پاکستان کے پر امن و ماحول سمیت دنیاکے نقشے میں اپنا مقام بنانے والے ملک کی اہمیت وثقافت دیکھا کر اپنے ملک کے نام کو روشن کرینگے انہوں تمام اساتذہ پاکستان بریمن شہر سے ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے مرد و خواتین کے ساتھ بچوں نے بھی کثیر تعداد میں شرکت کی اور پی ایس اے کے طلباء نے بریمن سمیت دیگر شہروں سے آنےوالے تمام طلبہ اور مہمانوں کا شکریہ ادا کیا قبل ازیں پاکستان کے قومی ترانے کے موقع پر یونیورسٹی کے اساتذہ سمیت شرکاء نے احتراماً کھڑے ہوئے بعد ازیں آل جرمن یونیورسٹیز پی ایس اے کی صدر شہیلا بیگ نمائندہ خاص نے کہا کہ پاکستان طلبہ کو ہم پاکستان کے سفیر کے نظر سے دیکھتے ہیں کافی محنتی اسٹوڈنٹس ہیں ہم اج پاکستان کے ثقافت دیکھے گے انہوں نے پی ایس اے کو بہترین پروگرام منقعدکرنے پر خراج تحسین پیش کرتے ھوئے کہا کہ اس طرح کے تقریبات دوسرے تہذیبوں کو دیکھنے کا موقع ملتاھے انہوں نے کہاکہ بریمن کی یونیورسٹیز میں متعدد ممالک کے طلبہ زیر تعلیم ھے ہر ایک کا الگ تہذیب و ثقافت ھے اس طرح کے تقریبات سے اپس میں ہم اہنگی ملتی ھے اور تہذیب وثقافت کو فروغ ملتاھے بعدازیں پاکستان کے ثقافت اور تاریخ پر ویڈیو پیش کی گی بعد ازیں پنجاب. بلوچستان،  سندھ اور کے پی کے کے ثقافت کو وہاں کے مشہور کھانے.  لباس اور درامدات و برامدات سمیت صوبوں کے شناختی لباس میں ملبوس طلبہ وطالبات نے ثقافتی میوزک پر شو پیش کیا۔ چاروں صوبوں کے مشہور گانوں پر رقص کیا گیا اس موقع یونیورسٹی کی طرف سے نمائندگی کرتے ہوئے مسز انیٹا لنگ اس پروگرام کو خوب سراھا اور خراج تحسین پیش کیا ۔۔ اس کے ساتھ بریمن شہر کے حلقہ احباب کے صدر فاروق بیگ نے آپنے تمام ساتھیوں اور فیملی سمیت پاکستانی کمیونٹی کی طرف سے نمائندگی کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے طالب علم جرمنی میں ایک سفیر کی حیثیت رکھتے ھےجرمنی کے شہری آپ کو پاکستان کے سفیر کی نگاہ سے دیکھتے ہین اپ کے کردار کو دیکھ کر ہی وہ پاکستان کے لیے اپنا نقطہ نظر بنائینگے انہوں نے کہاکہ پاکستان کے نوجوانوں نے ہر میدان میں اپنا لوہا منوایا ھے ۔۔ انہوں نے کہا پاکستان ایک ابھرتا ھوا ستارے کی مانند ھے دنیا کے نقشے پر جلد اپنا مقام پا لے گا ۔۔اور انہوں نے خصوصی طور پر کہا کہ گزشتہ 20 سال سے یورپی میڈیا نے جس طرح غلط قسم کا پراپوگنڈہ کرکے پاکستان کے چہرے کو سبوتاژ کرنے کی ناکام کوشش کی ہے ان شاء اللہ ہمارے نوجوان اور پاکستانی کمیونٹی جرمنی اور یورپ کے دیگر ممالک میں ایسے پروگرامات منعقد کرکے ان کی کوششیں نا صرف ناکام بنانے بلکہ پاکستان کی عزت و وقار کو خوبصورت طریقے سے پیش کر کے پاکستان کا ایک دوسرا پرامن اور محبت بھرا رخ بھی پیش کرتے ہیں ۔۔۔ کلچرل نائٹ میں بریمن یونیورسٹی کے پروفیسر شفیق کمبوہ صاحب کے علاوہ ۔۔۔ پروفیسر ایڈووکیٹ غلام مجتبی صاحب نے بھی خصوصی شرکت فرمائی اور آپنے خیالات کا اظہار کیا ۔۔۔ پروگرام میں پاکستان کے مختلف گانوں پر دھمال ڈالا گیا جبکہ قومی و علاقائی سونگ پیش کئے گئے جس پر پاکستانی طلبہ و طالبات نے رقص کر کے محفل کو لوٹ لیا پاکستان اسٹوڈنٹس ایسوسی ایشن کے بریمن صدر خرم شہزاد مزید بتایا کہ پی ایس اے بریمن میں گزشتہ 8 سال سے فعال ہیں ہم نئے انے والے طلبہ کی رہنمائی کرتے ھے تاکہ پاکستانی اسٹوڈنٹس کی رہائشی مسائل سے لیکر ہر قسم کی مدد کیا جاسکے اس موقع پر پی ایس اے کے طلباء کے ساتھ اس پروگرام کو آرگنائزر کرنے والے پی ایس اے کے جرنل سیکٹری خصال خالد کے ساتھ محمد سہیل نے کہا کہ پاکستانی کلچرل نائٹ کے لیے ہم گزشتہ کافی دنوں سے تیاریاں کررہے تھے بریمن کے مختلف یونیورسٹیز میں مقیم بیرونی ممالک کے طلبہ نے بھر پور دلچسپی لی ھے اس کے علاوہ پی ایس اے کی پوری ٹیم نے کہا ہم کوشش کررہے ہیں کہ پاکستان کے مثبت پہلوؤں اور کوششوں کو لوگوں کو دیکھایا جائے تاکہ پاکستان کا امیج بہترین ھوسکے کلچرل نائٹ میں پاکستان کے مختلف زبانوں کے گانے سنائے گئے صوبوں کی یکجہتی اور ثقافت پر ٹیبلو پیش کئے گئے جس کی نمائیندگی عزیر چشتی صاحب آپنی ٹیم کے ساتھ کررھے تھے تقریب میں موجود یونیورسٹیوں کے اساتذہ یونیورسٹی اسٹاف سمیت،  یورپین،  ریشین،  ترکش،  انڈین،  بنگالی اور نارتھ امریکن اور افریقین ممالک کےطلبہ نے بھر پور شرکت کی اور پی ایس اے کے کاوشوں کو سراہا پی ایس اے نے تقریب کے گریزال یونیورسٹی بریمن کے ہال کو چاروں طرف پاکستان کے بانی پاکستان،  وزیراعظم پاکستان سمیت معروف رہنماؤں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے معززین کے عارفہ کریم سے لیکر راشد منہاس کے پوسٹروں سے سجایا گیا تھا ۔کی اس مو قع پر شرکاء کے لیے عشائیہ کا اہتمام کیا گیا تقریب میں بریمن، ہمبرگ. فرینکفرٹ،  روسٹک و گردو نواح میں قائم جرمن یونیورسٹیز میں زیر تعلیم پاکستان و ساوتھ ایشین اسٹوڈنٹس کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔  پی ایس اے نے پاکستانی کمیونٹی کا شکریہ ادا کیا جس نے تقریب مین شرکت کرکے پروگرام کو چار چاند لگا دیا ۔ اس پروگرام کو ان تھک محنت سے کامیاب بنانے میں پی ایس اے کی ساری ٹیم خرم شہزاد ، جنید راشد خصال خالد، شہروز اسلم ، ولید خان ، عزیر چشتی ، محمد عزیر ، عادل مقصود ، عبداللہ شوانی ، حسنین خان ، ہارون بیگ ، محمد سہیل کے علاوہ طالبات میں سدرہ مریم ، یاسمین علی ،خدیجہ عمر ، فاطمہ سندس ، وردا مسعود ، فرحانہ تبسم، ردا صغیر کے علاوہ عاصمہ سہیل نے بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ، صدر خرم شہزاد اور ان کے تمام ساتھیوں نے پروگرام کے اختتام پر مہمانوں کی پاکستانی کھانوں سے تواضع کی ۔۔ جس کو جرمن اور دوسرے ممالک کے شرکاء نے بہت پسند کیا

تعارف: Admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

x

Check Also

چوہدری بشارت حسین مرحوم کے والد گرامی مرحوم کے بلند درجات و مغفرت کے لیے دعا کی گئی۔

چوہدری بشارت حسین مرحوم کے والد گرامی مرحوم کے بلند درجات و مغفرت کے لیے دعا ...