بنیادی صفحہ » برطانیہ » برطانوی شہری دہشتگردی کی سرگرمیوں میں ملوث ہو تو اسکا برطانیہ میں براہ راست داخلہ ممکن نہیں ہو گا

برطانوی شہری دہشتگردی کی سرگرمیوں میں ملوث ہو تو اسکا برطانیہ میں براہ راست داخلہ ممکن نہیں ہو گا

لندن(عارف چوہدری)

تین سال پہلے سولہ سال کی عمر میں داعش میں شامل ہونے والی شمیمہ بیگم جو کہ اجکل سیریا میں قائم مہاجر کیمپ میں موجود ہے حاملہ ہے اور جلد ہی اسکے ہاں بیٹے کی پیدائش متوقع ہے ۔برطانوی وزارت داخلہ نے کچھ دن پہلے شممیہ بیگم کی برطانوی شہریت کو ختم کر دیا اور اس پر واپسی کے دروازے بند کر دے تھے۔ ہاؤس آف کامنز میں سوالات کے جوابات دیتے ہوئے سیکرٹری داخلہ جاوید خان کا کہنا تھا کہ شمیمہ بیگم کا بیٹا برطانوی شہریت کا اہل ہے اور وہ برطانیہ میں داخل ہو سکتا ہے ماں کی وجہ سے بچے پر پابندی نہیں لگائی جا سکتی ۔ان کا مذید کہنا تھا کہ کوئ بھی برطانوی شہری دہشتگردی کی سرگرمیوں میں ملوث ہو تو اسکا برطانیہ میں براہ راست داخلہ ممکن نہیں ہو گا انکا کہنا تھا کہ دہشت گردی کی روک تھام کے لیے حکومت کو سخت فیصلے کرنے پڑ رہے ہیں اور برطانیہ سے تقریباً نو سو افراد میں سے چالیس فیصد واپس برطانیہ آئے ہیں ان سے سخت پوچھ گچھ کے بعد یہاں رہنے کی اجازت دی ہے کیونکہ وہ اب برطانیہ یا پھر ان کا دہشتگردی میں ملوث ہونے کا امکان بالکل نہیں ہے

تعارف: Admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

x

Check Also

برطانیہ میں ہونے والے لوکل کونسل کے انتخابات میں بڑے بڑے برج الٹ گئے

  برطانیہ میں ہونے والے لوکل کونسل کے انتخابات میں بڑے بڑے برج الٹ گئے ...