بنیادی صفحہ » صدائےکشمیر » اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنر کی رپورٹ پر عملدرآمد ہونا چاہئے : برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ

اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنر کی رپورٹ پر عملدرآمد ہونا چاہئے : برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ

سٹوک آن ٹرینٹ (عارف چوہدری )

برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ ، کشمیری رہنماؤں نے مقبوضہ کشمیر میں بگڑتی صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقہ سے حل کرنے کا مطالبہ کر دیا ، اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنر کی رپورٹ پر عملدرآمد ہونا چاہئے ۔ برطانوی پارلیمنٹ کے کشمیرگروپ کی رپورٹ اور آمدہ ہفتے یورپی پارلیمنٹ میں کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی سماعت بھارتی افواج کی جانب سے مظالم اور عالمی برادری کی مسئلہ کشمیر پر توجہ بیرون ممالک کشمیریوں کی محنت و کاوشوں کا نتیجہ ہے ۔ برطانیہ و یورپ کے ہر ایوان میں کشمیر دوست ارکان موجود ہیں جو بلا امتیاز کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت جاری رکھیں گے ۔پاکستان اور بھارت مسئلہ کشمیر پر جلد از جلد مذاکرات کریں جن میں کشمیریوں کی شرکت کو یقینی بنایا جائے ۔ برطانیہ و یورپ میں مقیم کشمیری اپنے مظلوم بھائیوں کی ااواز بن کر عالمی سطح پر ہر دروازہ کھٹکھٹائیں گے ۔ یورپی پارلیمنٹ کے بعد جنیوا، امریکہ اور اقوام متحدہ کے سامنے بھی احتجاج کیا جائے گااور کشمیر پر پاس قررادادوں پر عمل کے لیے جدو جہد تیزکی جائے گی ۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پی پی رہنماء وصدر سٹوک آن ٹرینٹ محمد نوید مغل کے تعاون سے منقعدہ سیمینار سے خطاب میں کیا ۔ سیمینار کی صدارت تحریک حق خود ارادیت کے چئیرمین راجہ نجابت حسین نے کی جبکہ سیمینار کے مہمان خصوصی اوپوزیشن لیڈر آزاد کشمیر چوہدری محمد یاسین تھے ۔سیمینار میں یورپی پارلیمنٹ میں فرینڈز آف کشمیر کی چئیرپرسن ایم ای پی اینتھیامیکنٹائر ،برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر گروپ کے سینئر وائس چئیرمین ایم پی جیک برئیرٹن ، ممبر برطانوی پارلیمنٹ روتھ سمیتھ ، ایم پی گیرتھ سنیل ، لیبر پارٹی کے پارلیمانی امیدوار مارک مکڈونلڈ ، سابق لارڈ مئیر چوہدری باغ علی اور دیگر اہم شخصیات نے خصوصی شرکت کو خطاب کیا ۔ اس موقع پر تقریب کے مہمان خصوصی اپوزیشن لیڈر چوہدری محمد یاسین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم سے تنگ آ کرلوگ آواز اٹھاتے ہیں تو بھارتی فوج گھروں میں گھس کرنوجوانوں کو شہید اور عورتوں اور بچوں پر تشد د کرتی ہے ۔مقبوضہ کشمیر کی عوام جس بہادری اور جرأت سے اپنے وطن کی آزادی کے لیے جدو جہد کر رہے ہیں ہم ان کی آواز بن کر عالمی سطح پر کوششیں تیز کریں گے ۔ اپوزیشن لیڈر نے ممبران پارلیمنٹ پر زور دیا کہ وہ اپنے اپنے ایوانوں میں کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی آواز بلند کریں اور اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد کے لیے ہمارا ساتھ دیں ۔ انہوں نے برطانیہ و یورپ میں مقیم کشمیریوں کی جانب سے لندن ، برسلز ، جرمنی اور دیگر دارلحکومتوں میں مظاہرے کرنے اور ممبران پارلیمنٹ سے رابطوں پرتارکین وطن کو خراج تحسین پیش کیا ۔ تحریک حق خود ارادیت کے چئیرمین و صدر تقریب راجہ نجابت حسین نے کہا کہ ہماری تنظیم نے برطانوی ممبران پارلیمنٹ کے تعاون سے صدر آزاد کشمیر ، وزیر اعظم اور اپوزیشن لیڈر کے ساتھ مل کر گذشتہ چند سالوں میں کشمیر کے حوالے سے بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں ۔ ہم کشمیری عوام کو تمام حقوق ملنے تک اپنی جدو جہد جاری رکھیں گے ۔ آئندہ ہفتے یورپی پارلیمنٹ کے ممبران کو کشمیر کی تارزہ صورتحال سے آگاہ کریں گے اور ان سے مطالبہ کریں گے بھارتی مظالم کو رکوانے کے لیے اپنے ایوانوں میں آواز بلند کریں ۔راجہ نجابت حسین نے کہا کہ برٹش کشمیری ریاست کی آزادی کے لیے پر امن سیاسی و سفارتی جدو جہد کر رہے ہیں اور ان مقاصد کے حصول کے لیے ہر پلیٹ فارم پر کوششیں تیز کریں گے ۔ اس موقع پر یورپی پارلیمنٹ میں ویسٹ مڈلینڈ کی کنزرویٹو ممبر ایم ای پی اینتھیا میکنٹائر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں امن بحال کر کے وہاں کی عوام کو حق خود ارادیت دیا جائے ۔ کشمیر میں تشدد اور ہلاکتیں قابل مذمت ہیں ۔ بھارت اقوام متحدہ اور برطانوی پارلیمنٹ کی رپورٹ پر عملدرآمد کرتے ہوئے کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو بند کرے ۔ پاکستان بھی آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کی عوام کو آئینی اصلاحات کے ساتھ عوام کو تمام حقوق فراہم کرے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ گذشتہ چند سالوں سے فرینڈز آف کشمیر کی چئیرپرسن کی حیثیت سے کشمیریوں کا کیس لڑ رہی ہیں ۔ اگلے ہفتے ایم ای پی واجد خان کی کوششوں سے یورپی پارلیمنٹ کی انسانی حقوق کمیٹی میں سماعت ہو رہی ہے وہاں ہم یورپی یونین کی نمائندہ سے اپیل کریں گے کہ وہ مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر اٹھائیں اور بھارت کو حل کے لیے مجبور کریں ۔ انہوں نے راجہ نجابت حسین اور ان کی ٹیم کی کوششوں پر خراج تحسین پیش کیا ۔ برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر گروپ کے سینئر وائس چئیرمین ایم پی جیک برئیرٹن نے کہا کہ ہمارے گروپ نے کشمیریوں کے حق میں رپورٹ مرتب کر کے بھارت کو ایک واضح پیغام دیا ہے کہ ہم ہر طرح کی دہشت گردی کی مذمت کرتے ہیں جس میں چاہے حکومتیں شامل ہوں یا دہشت گرد گروپ ۔مسئلہ کشمیر ایک سیاسی اورایک قوم کے مستقبل کا مسئلہ ہے جسے پر امن طریقہ سے حل کرنا ہو گا ۔ ہم اپنے دیگر ساتھیوں سے مل کر برطانوی پارلیمنٹ میں مفصل بحث کی بھی کوشش کریں گے ۔ دیگر برطانوی پارلیمنٹ روتھ سمیتھ ، ایم پی گیرتھ سنیل ، لیبر پارٹی کے پارلیمانی امیدوار مارک مکڈونلڈ نے کہا کہ ہم پارلیمنٹ کے اندر اور باہر کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت کریں گے ۔ اس موقع پر میزبان تقریب نوید مغل نے مہمان خصوصی چوہدری یاسین کا بالخصو ص اور دیگر مہمانان کا شکریہ ادا کیا ۔ اس ومقع پر تقریب میں کونسلر امجد وزیر ، رازق بھٹی ، ہیری بوٹا، چوہدری محمد اکرم ، چوہدری صغیر پوٹھی ، ڈاکٹر عبدالصبور جاوید اور دیگر نے بھی اظہار خیال کیا ۔

تعارف: Admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

x

Check Also

۔ انڈیا نے کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے ریکارڈ توڑڈالے

رپورٹ مطیع اللہ کشمیر کونسل یورپ کے چئیرمین سید علی رضا نے کہا ھے کہ ...