بنیادی صفحہ » پاکستان » پردہ : ۔۔۔ چہرے پریاعقل پر!!!

پردہ : ۔۔۔ چہرے پریاعقل پر!!!

کاشفہ شفق
اِسلام نےعورت کو عزت دی ہے یا آج کے جدید وترقی يافتہ معاشرے نے؟ آج اگر ایک پاؤ گوشت لیں تو شاپِنگ بیگ میں بَند کر کے لے جاتے ہیں، اور پچاس کلو کی عورت بغیر پَردے کے بازاروں میں گھومتی ہے، کیا یہی ہے آج ك کا جديد مُعاشرہ کہ کھانا تو پاکیزہ ہو اور پکانے والی چاہےجیسی بھی ہو؟
جديد معاشرے کاعجیب فلسفہ:
لوگ اپنی گاڑیوں کو تو ڈھانپ کر رکھتے ہیں تاکہ اُنہیں دُھول مٹی سے بچا سکیں، مگر اپنی عورتوں کو بے پَردہ گُھومنے دیتے ہیں چاہے اُن پر کِتنی ہی گَندی نَظریں کیوں نہ پڑیں؟
دورجدید کی جاہلیت:
*عورت کی تصاویر استعمال کر کے چھوٹی بڑی تمام کمپنیاں اپنی تجارت کوفروغ دیتی ہیں، یہاں تک کہ َشیونگ كکريم میں بھی اس کی تصاوِير ہوتی ہیں۔ فراانس و امریکہ میںجسم فروشی کا شُمارنفع بخش تجارت کے زُمرے میں آتا ہے۔ اُن لوگوں نے اسلامی ممالِک میں بھی ڈیرے ڈال لئے ہیں۔مسلمان عورت کو بھی جہنم کی طرف لے جا رہے ہیں۔ چنانچہ مسلمان عورت تہذیب جدید کے نام پر بے پَردہ پِھرنے لگی ہے۔
ماسٹر پَلان كکے ذريعے نئ نسل کو تباہ کیاجا رہا ہے:
غور کیجئے!
ہر اشتہار میں لڑکا لڑکی کے عشق کی کہانی مِلے گی!
ذرا سوچئے!
سیون اَپ کے اشتہار میں محبت کا کیا کام؟
ترنگ چائے کے اشتہار میں گلے لگنے اور ناچنے کا کیا کام؟
موبائل کے اشتہار میں لڑکے لڑکیوں کی محبت کا کیا کام؟
دیکھئے!
آج کوئی نوجوان اِس فحاشی سے بچ نہیں پایا۔ سکھایا جا رہا ہے کہ آپ بھی شیطان کی پیروی کریں، فحاشی کریں، مَوج کریں!
آج عورت خودد اتنی بے حس ہو چُکی ہے کہ جو بھی پَردے کی بات کرے اُس کے خِلاف سَڑکوں پر نکل آتی ہے۔ جب کہ ایک ایک روپے کی ٹافِیوں، جُوتوں، حتی کہ مردوں كکے شيو کرنے كکے سامان تک کے ساتھ بکنے پر کوئی احتجاج نہیں کرتی، بلکہ اِسے روشن خیالی کی علامت سمجھتی ہے۔
لمحہ شرمندگی!
آج ہر بکنے والی چیز کے ساتھ عورت کی حیاء اور مرد کی غیرت بھی بک رہی ہے۔
نام نہادپردہ۔۔۔۔صرف فیشن کے لئے!
فی زمانہ برقعہ اتنادلکش ودل فریب ہے کہ اُس کے اُوپر ايک اور برقعہ اوڑھنے کی ضرورت ہے!
’’پردہ نظرکاہوتاہے‘‘
اسی سوچ نے آدھی قوم کوبے پردہ کردیاہے!!!
مرد آنکھیں نیچی نہیں کرنا چاہتا، عورت پَردہ کرنے کو جہالت سمجھتی ہے… مگر دونوں کو مُعاشرے میں عزت و احترام کی تلاش ہے!
بے پردہ نظرآئیں جوکل چندبیبیاں
اکبرزمیں میں غیرت قومی سے گڑگیا
پوچھاجوان سے آپ کاپردہ وہ کیاہوا
کہنے لگیں کہ عقل پہ مردوں کی پڑگیا
(اکبرالٰہ آبادی)
پردہ عورت کے چہرے پرہوتاہے،اگرچہرے پرنہیں توسمجھ لیجئے کہ عقل پہ پڑاہواہے!
اگر جسم کی نمائش کرنا ماڈَرن و ترقی یافتہ ہونے کی عَلامَت ہے تو پِھر جانور انسانوں سے بہت زیادہ ماڈرن و ترقی یافتہ ہیں!
پہلے شرم کی وجہ سے پردہ کیاجاتاتھااوراب پردہ کرتے ہوئے شرم آتی ہے!!!
(بصیرت فیچرس)

 
 

تعارف: Admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

x

Check Also

گورنر پنجاب چوہدری سرور کی استعفی طلب کیے جانے کی خبروں کی تردید

پاکپتن Oc گورنر پنجاب چوہدری سرور نے پاکپتن پہنچ کر دربار بابا فرید پر حاضری ...