بنیادی صفحہ » ادب » افسانہ

افسانہ

غنیمت

غنیمت اسلم بہت دنوں سے اپنے ابا سے نئے جوتوں کی فرماش کررہا تھا مگر جمیل ہر بار اسے ٹال رہا تھا ۔جمیل ایک دفتر میں معمولی ملازم تھا ۔بینک سے قرض لے کر بڑی مشکل سے چھت میسر ہوئی تھی ۔ہر ماہ بپنک کی قسط اسے مہاجن کی یاد دلاتی ،فرق صرف اتنا تھا کہ مہاجن گھر آکر سود ...

مزید پڑھیں »

جوتا چور

چور سے محبت سبق آموز تحریر: زبیر ملتانی۔۔۔۔۔۔۔ وہ عورت اپنے بچے کے جوتے چوری ہونے کی شکایت لگانے آئی تھی.اس سے پہلے بھی دو بار اس کے بیٹے کے جوتے چوری ہو چکے تھے اور آج وہ غصےسے بھر پور نظر آرہی تھی.مولوی صاحب اسے سمجھارہے تھے کہ ہم یہاں صرف ان کو پڑھانے آتے ہیں ان کے جوتوں ...

مزید پڑھیں »

کون زیادہ مسلمان ؟

اس کے کپکپاتے ہاتھ میں ابھی تک زندگی کی رمق باقی تھی اس کی انگلیاں ہل رہی تھیں اور اسکی بند مٹھی میں ابھی تک پاکستان کا جھنڈا لرز رھا تھا یہ ارم تھی !!!! کسی کو آیت کریمہ کا ختم کروانا ہو تو ارم پیش پیش! کسی بچے کو دعا قنوت کا تلفظ درست کروانا ہو تو ارم کی ...

مزید پڑھیں »

۔۔بدلتا وقت ۔۔۔۔افسانہ

افسانہ۔۔۔بدلتا وقت ڈاکٹر مینا نقوی۔۔۔بھارت تارا نے ڈائنگ ٹیبل صاف کرتے ہوئے پونم کو دیکھ کے سوچا۔۔۔”کتنی چھوٹی سی تھی یہ لڑکی اور اب کتنی بڑی ہو گئ ۔۔وقت کیسے گزر گیا پتہ ہی نہیں چلا” ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔گلابی رنگت اور بڑی بڑی خوبصورت آنکھوں والی پونم لیپ ٹاپ پر کچھ تلاش کر رہی تھی اس نے ماں کی طرف نظر اٹھا ...

مزید پڑھیں »

افسانہ۔۔۔۔۔۔۔زندگی: ڈاکٹر مینا نقوی

افسانہ۔۔۔۔۔۔۔زندگی ڈاکٹر مینا نقوی رات کے بارہ بج چکے تھے۔۔آسمان میں بادل چھائے ہوئے تھے اس لئے تارے بھی روپوش تھے۔۔دور تک سناٹا۔۔۔اور ایسے میں وہ تنہا عورت نہ جانے کہاں جا رہی تھی۔۔۔چلتے چلتے وہ رکی آسمان کی طرف دیکھا ۔۔ایک لمبی سانس بھری۔۔اور پھر آگے کو چل دی ۔ ۔۔ندی کے پانی کی آواز ماحول کو پر اسراد ...

مزید پڑھیں »

پوور کنٹری ….!!!!

” سنو! تم کل سے نظر نہیں آ رہے… کہاں تھے؟” “actually میں ممّا کے ساتھ الحمراء گیا ہوا تھا. وہاں فیسٹیول تھا. وہ ہے نا وہ اردو پوئٹ….. کیا نام ہے اُس کا… او گاڈ آئی فورگوٹ! وہ جس کے نام میں ایک ہی ورڈ دو بار آتا ہے” “فیض احمد فیض” ” exactly وہی… فیض احمد فیض… ممّا ...

مزید پڑھیں »

…….. ڈر……………. اصغر شمیم،کولکاتا

مائکرو فکشن اصغر شمیم،کولکاتا،انڈیا …….. ڈر……………. وہ موت سے نہیں ڈرتا تھا۔ کئی سالوں سے اس کا یہ روز کا معمول تھا کہ رات ۱۲ بجے کے بعد وہ سنسان سڑک اور خالی اُوور برج پر اپنی بائک کی رفتار کے ساتھ موت کا کھیل کھیلتا تھا۔۔ ماں باپ لاکھ سمجھاتے مگر وہ نہیں سنتا ۔۔۔اس کا ماننا تھا کہ ...

مزید پڑھیں »

ببلی / بابر

ببلی / بابر از قرب عباس لکڑی کے فریم میں بڑا آئینہ لگا ہوا تھا، جس میں نیچے سے اوپر تک ایک لمبی دراڑ تھی جو کہ اُس کے عکس کو دو حصوں میں بانٹ رہی تھی۔ آنکھوں کا کاجل جو نمکین پانی کے سا تھ بہہ کر رخساروں پر کچھ کالی اور ٹیڑھی لکیریں چھوڑ گیا تھا، جب سُرخ ...

مزید پڑھیں »

گلابی جاڑا اور چائے کا رومانس

گلابی جاڑا اور چائے کا رومانس تحریر۔۔۔ وقاراحمد ملک دسمبر شروع ہو چکا ہے۔ گلابی جاڑوں نے میرے شہر میں طنابیں کسنا شروع کر دی ہیں۔ اس سردی کا موسم آن پہنچا ہے جس میں دن مختصر ، شامیں لمبی اور راتیں طویل ہو جاتی ہیں۔ لیکن ابھی اس سردی کا انتظار ہے جس سے ناک سرخ، آنکھیں نم اور ...

مزید پڑھیں »

*ہمدردی کے دو بول*

*ہمدردی کے دو بول* ایک دفعہ لاہور میں کچھ دوست ایک ریسٹورنٹ پر لے گئے. ویٹر آرڈر لینے آیا تو دوستوں نے میری طرف اشارہ کیاکہ مہمان جو کہے لے آؤ ویٹر نے خوشدلی سے پوچھا ” کیا لاؤں”؟ میں نے سر اٹھا کر اسے دیکھا اور مسکرا کر کہا: “ایک کلو مٹن کڑاہی ہلکی کالی مرچ میں, روغنی نان ...

مزید پڑھیں »

چچا غالب سے ۔۔۔ایک ملاقات

چچا غالب سے ۔۔۔ایک ملاقات ملاقاتی ۔ ۔۔۔۔ایک ترقی پسند شاعر شاعر ۔ چچا غالب !آپ کہتے ہیں ، ہیں اور بھی دنیا میں سخن وربہت اچھے کہتے ہیں کہ غالب کا ہے انداز بیان اور آپ کے انداز بیاں ،،اور ،، سے کیا مراد ہے ؟ غالب ۔انداز بیاں اور سے مراد ہے کہ نہ میں نے میر کی ...

مزید پڑھیں »

گولیوں کی تڑتڑاہٹ ، لہو رنگ تتلیاں اور جگنوؤں کا دیس

تحریر احمد شہزاد گولیوں کی تڑتڑاہٹ ، لہو رنگ تتلیاں اور جگنوؤں کا دیس عمران انکل! میں اریبہ ہوں، اب ہوں بھی یا نہیں اب اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا…..آپ تو کم ازکم میرے نام سے واقف ہوں گے اگر نام سے نہیں تو میری تصویر ضرور آپ کی نظروں سے گزری ہو گی کیونکہ اُس دن ( سانحہ ...

مزید پڑھیں »

 سکیسر کی بتیاں۔ ۔ ۔ افسانہ ۔ ۔ ۔ ۔ تحریر ۔ ۔ وقار احمد ملک

سکیسر کی بتیاں۔ ۔ ۔ افسانہ ۔ ۔ ۔ ۔ تحریر ۔ ۔ وقار احمد ملک میرا نام بلقیس ہے۔ صرف بلقیس، آگے پیچھے کچھ نہیں۔ ہاں بچپن میں مَیں بلقیس زماں ہوا کرتی تھی جو نام میرے باپ کی دین تھا اور شادی تک میرے ساتھ لگا رہا۔ بعد میں مَیں بلقیس زماں سے بلقیس ستار بن گئی ۔ ...

مزید پڑھیں »

میں اجنبی ہوں ، کروں کس سے تذکرے تیرے ۔ ۔ ۔

“اور تُم ، معلوم نہیں کہ یہ تم تک پہنچے یا نہ پہنچے ، لیکن بحرحال مجھے اپنے دل کو بہلانا ہے۔ ۔ بجز میرے ، کوئی جانے نہ سلسلے تیرے ۔ ۔ ۔ میں اجنبی ہوں ، کروں کس سے تذکرے تیرے ۔ ۔ ۔ ۔ تمہیں معلوم ہے بلکہ بہت اچھی طرح معلوم ہے کہ میں محبت کے ...

مزید پڑھیں »

 انٹرویو

انٹرویو بڑی دوڑ دھوپ کے بعد وہ آفس پہنچ گیا؛ آج اس کا انٹرویو تھا ۔ وہ گھر سے نکلتے ہوئے سوچ رہا تھا ؛ اے کاش آج میں کامیاب ہو گیا تو فوراً اپنے پشتینی مکان کو خیر باد کہہ دونگا اور یہیں شہر میں قیام کروں گا ؛ امی اور ابو کی روزانہ کی مغزماری سے جان چھڑا ...

مزید پڑھیں »

صرف پچاس روپوں کی ہی تو بات ہے ۔

ایک بجلی کے کھمبے پر ایک کاغذ چپکا دیکھ کر میں قریب چلا گیا اور اس پر لکھی تحریر پڑھنے لگا ، لکھا تھا………! برائے کرم ضرور پڑھیں اس راستے پر کل میرا 50 روپیہ کا نوٹ کھو گیا ھے ، مجھے ٹھیک سے دکھائی نہیں دیتا جسے بھی ملے برائے کرم پہنچا دے نوازش ھوگی……………. !!! ایڈریس:- ۔۔۔۔**۔۔۔۔***۔۔۔ ۔۔۔۔*۔۔۔۔*۔۔۔۔*۔۔۔۔* ...

مزید پڑھیں »